شیخ رشید کنوارے نہیں بلکہ ایک شادی کرکے مکر چکے ہیں،انھوں نے ایوارڈ کا لالچ دیکر انجمن کو بلایا لیکن انکار پر یہ ایوارڈ ریما کو دے دیا۔۔

سربراہ پاکستان عوامی تحریک شیخ رشید احمد کو ملک کے سینئر سیاستدانوں میں شمار کیا جاتا ہے۔انھوں نے اپنی سیاست کا آغاز1968میں کالج کے زمانے سے شروع کیا تھا اور جنرل ایوب کے خلاف تحریک چلائی تھی۔ وہ ایک طویل عرصہ مسلم لیگ سے ھی وابستہ رہے اور اس وقت بھی اپوزیشن لیڈر شپ کا ایک بھرپور کردار ادا کر رہے ہیں تاہم ان کے ذاتی کردار کے حوالے سے ان کا ماضی کچھ اتنا زیادہ اچھا نہیں رہا ۔ ان پر کئی خواتین اداکارائوں اور اہم شخصیات سے تعلقا ت کا بھی انکشاف ہو اہے۔ شیخ رشید کے بارے میں ایک عام تاثر یہ ہے کہ وہ کنوارے ہیں۔ تاہم ماضی میں ایک خاتون شہناز بیگم نے ان کی اہلیہ ہونے کا بھی دعویٰ کیا تھا لیکن ان کی آواز
بھی زمانے کے شور میں بھی دب ہی گئی۔ اور حالات اس نہج پر آگئے کہ شہناز بیگم کو شیخ رشید سے تعلق کی بنا پر رسوائی کا سامنا کرنا پڑ گیا کیونکہ شیخ رشید نے انھیں اپنی اہلیہ قرار دینے سے انکار کر دیا تھا ۔ شہنازبیگم نے بتایا کہ شیخ رشید ایک نفسیاتی مریض تھے ۔ جب میں ان کو عورتوں سے تعلقات رکھنے سے منع کرتی تھی تو وہ کہا کرتے تھے کہ کالج میں لڑکوں نے مجھ سے کئی بار زیادتی کی تھی میں اب ان کی بہنوں سے بدلہ لے رہا ہوں ۔اتنا ہی نہیں بلکہ شیخ رشید نے اداکارہ انجمن کو ایوارڈ دینے کا لالچ دے کر چائے پر اکیلا بلایا لیکن خاتون اداکارہ نے اکیلے آنے سے انکار کر دیا جس کے بعد یہ ایوارڈ اداکارہ ریما کو مل گیا۔ بحوالہ۔۔پارلیمنٹ ہائوس سے بازار حسن تک

اپنا تبصرہ بھیجیں