Poetry


Kal Dophar Ajeeb Si Ik Be Dili Rahi
Telian Jala Ke Bhujata Raha Hoon Mein

Tere Qol-o Qarar Se Pehle
Apne Kuch Aur Bhi Sahare Thay

Yun Mere Sath Dafan Dil Be-Qarar Ho
Chota Sa Ik Mazar Ke Andar Mazar Ho

Apni Tabhaion Ka Muje Koi Gham Nai
Tum Ne Kisi Ke Sath Mohabat Nibah Tu Di

Bemar Ko Marz Ki Dawa Deni Chahye
Mein Peta Hun Pila Deni Chahye

Aya Hi Tha Abi Mere Lab Pe Wafa Ka Naam
Kuch Doston Ne Hath Mein Pathar Uta Liye

Jis Nagar Bi Jao Qissay Hain Kambakhat Dil Ke
Koi Le Ke Ro Raha Hai, Koi Dey Ke Ro Raha Hai

Itne Ghane Badal Ke Peche
Kitna Tanha Ho Ga Chand

Ki Wafa Ham Se Tu Ghair Is Ko Jafa Kehte Hain
Hoti Ayi Hai Ke Achon Ko Bura Kehte Hain

Maut Tu NaaM Se Badnaam Hui Warna…
Takleef Tu Zindagi Bhi Dya Karti Hai..!!

Wo Sooye Ittefaaq Aa Mile The Hum Se..
Hum Nadaan Samjhe Hamari Dua’on Mein Asar Hai…!!

Ishq Insan Ko Qalandar Boo Ali Karta Hai…
IshQ! PagaL Nahi PagaL Ko Waali Karta Hai..!!!

Sabhi Ka Deekho Nahi Hota Hai Naseebaan Roshan Sitaraon Jaisa…
Sayana Woh Hai Jo Path Jhar Main Bhi Sajaley Gulshan Baharoon Jaisa…!!

Ao Kabhi Yun Bhi Meray Pass..
Ke Anay Main Lamha Aur Janay Main Zindagi Guzar jaey..!!

Goo Dhuki Dil Ko Bhout Bacahaya Hum Ne…
Jis Jaga Zakham Ho Wahan Choot Sada Lagti hai..!!

Tujhe Bhoolne Ko Ik Pal Chaiye,
Wo Pal Jisy Maut Kehte Hain Log…!!

Na Neend Hai Aankhon Me,
Na Hi Koi Hasrat,Kitna Saada Sa Reh Gaya Hun Mein Tere Baghair…!!!

Karain Ge Tark-e-Taaluq Ye Tum Se Wada Raha,
Badan Se Saans Ka Rishta To Toot Jane Do…!!!

Mila To Aur Bhi Taqseem Kar Gaya Mujh Ko,
Sameitna Thin Jise Meri Kirchiyaan “MOhsin”!!!

Is Qehat-e-Dosti Mein Koi Mujh Se Kia Mile..
Khud Apne Aap Ko Bhi Mayassar Nahi Hun Mein..!!!

Qabrain Hi Jaanti Hain Ke Is Shehre-e-Jabar Mein Log,
Mar Kar Hue Dafan Hain Ya Zinda Garay Hain Log…!!!

Ye Mohabbat Bhi Aik Neki Hai..
Aao Darya Mein Daal Dete Hain!!!

Ager Wo Zindagi Mein Faqat Ik Baar Mera Ho Jata,
To Mein Zamane Ki Kitaabon Se Lafz Bewafai Hi Mita Deta…!!!

Mujhe Hukam Hua Kuch Or Mang Us Ke Siwa,
Main Dast-e-Dua Se Uth Gaya Ke Mujhe Justaju Bus Usi Ki Thi.!!!

Jism Ki pooja Ko Mohabbat Kehta Hai Aaj Ka Falsafa,
Yehi Door-e-Hazir Ki Mohabbat Hai, To Mein Jahil Hi Sahi…!!!

Uski Mohabbat Ka Silsila Bhi Kya Ajeeb Silsila Tha,
Apna Bhi Nahi Banaya, Aur Kisi Ka Hone Bhi Nahi Diya…..!!

Teri Mohabbat Se Le Kar Tere Alvida Kehne Tak,
Maine Sirf Tujhe Chaaha, Tujh Se Kuch Nhi Chaaha…!!!

Saanson Ke Silsile Ko Na Do Zindagi Ka Naam,
Jeene Ke Ba-Wajood Bhi Mar Jaate Hain Kuch Log . . . !!

Bhool jana or bhula dena faqat ek weham hai,
Dilon se kab nikalte hain woh log mohabbat jinse ho jaye.!!!

Tujhse Mila Nahi Hoon Magar Chahta Hoon Main,
Tu Humsafar Ho Aur Kahin Ka Safar Na Ho.!!!

Yahi ek tamasha hota hai Rah-e-ulft main,
Dil apna hota hai par raj kisi aur ka hota hai.!!!

Rakhe Hain Dil Mai Hum Ne Barey Ehtram Se,
Jo Ghum Diye Hai Tumne Mohabbat Ke Naam Se.!!!

JAhan JAhan KOi ThOkar Hai MeRi QiSmat Main,
WAhin Wahin Liye Phirti Hai ZinDagi Mujh KO..!!

Phir yun hua ke jism hi pathar ka ho gaya…..
Roka jab ek shakhs ki awaaz ne mujhe!!

Shamil Hun Khail Main Teri Tafreeh Ke Liay..
Bazi Tu Bari Dair Se hara Huwa Hun Main!!!

Ishq Main Wafa Hain Wazoo Ki Manind..
Bey Wazu Namazain Nahi Hoti..!!

Shidat E Ishq Ne Yeh Haal Kya Hai Mera…
Nabz Chalti Hai Tu Dhukti Hai Kalai Meri..!!!

Elm O Hikmat Ka Jinhain Shauq Ho Aeen Na Idhar..
Kocha E Ishq main Kuch Bhi Nahi Hairat Ke Siwa!!

Rooh Tak Neelaam Ho Jati Hai Bazar E Ishq Main..
Itna Asan Nahi Hota Kisi Ko Apna Bana Lena!!!

Ai Ishq! Bus Kar Mujh Par Aur Bojh Na Dal..
Pehlay Hi Mera Dil, Dil Ka Mareez Hai!!

KamaL Ka PeeR Hai IshQ Bhi…
Chor Deta Hai Mureed Kar Ke!!

Array Sahab!! Tanhai Ka Ek Alag Hi Maza Hai..
Iss Main Darr Nahi Hota Kisi Ke Chor Janay Ka!!

Kitni Ajeeb Hai Meray Ander Ki Tanhai..
Hazaron Apnay Hain Magar Yaad Tum Hi Atay Ho..!!

Mainay Tu Woh Khoya Jo Mera Tha Hi Nahin..
Magar Us Ne Woh Khoya Jo Sirf usi Ka Tha..!!

Tumhain Tu Arzoo Thi Haal Mera Baad Se Baadtar Hoo..
Woh Din Aya Tu Kyun Keh Deya “Dekha Nahi Jata”..!!!

Ho Jo Mumkin Tu Apna Bana Lo Tum..
Meri Tanhai Gawah Ga Mera Apna Koi Nahi..!!!

Soch Samaj Kar Ankhain Milana Tum…
Yeh Pyar Bhout Pyar Se Hojata Hai..!!!

Yaqeen Us Ko Nahi Ata Wazahat main Nahi Karta…
Guzar Jaey Gi Sari Umar Shayad Imtehano Main..!!

Ek Main Hi Nahi Jurm E Mohabbat ka Khatawar..
Halka Sa Tabassum Tu Shamil Tha Udar Se..!!

Main Fanaa Hogaya Woh Badla Phir Bhi Nahi Faraz..
Meri Chahat Se Bhi Sachi Thi Nafrat Us Ki..!!

Nahi Qabil Teray Laikin Munasib Agar Samjoo..
Yaad Rakhna Duaon Main Yehi Hai Dua Ai Dost!!!

Taras Jao Ge Hamaray Labon Se Sunnay Ko Ek Ek Lafz..
Pyaar Ki Baat Tu Kya Ghum Shikayat Bhi Nahi Karen Gii..!!!

Iss Qaddar Zorr Say Tamachay Parray Hain…
Daikh Tau Surkhi Meray Rukhsaar Ki..!!!

Ishq Samjay Thay Jis Ko Shahyad.. Thaa Bus Ek Narsai Ka Rishta..
Meray Aur Uss Ke Darmiyan Nikla.. Umar Bhar Ki Judai Ka..!!

Hai Yeh Bazar Jhoot Ka Bazar..Phir Yunhi Jins Kyun Na Milain Hum..
Karke Ek Dosray Se Ehad E Wafa…Ao Kuch Dair Jhoot Bolain Hum..!!!

Kon Soud E Zeyaan Ki Duniya Main.. Dard E Gurbat Ka Saath Deta Hai..
Jab Muqabil Hun Ishq Aur Daulat.. Husan E Daulat Ka Saath Deta Hai..!!

Paas Reh Kar Judai Ki Tujh Se.. Durr Ho Kar Tujhe Talash Kya..
Mainay Tera Nishaan Ghuum Karke … Apnay Ander Tujhe Talaash Kya..!!

Tum Jab Aogi Tu Khoya Huwa Paogi Mujhe..
Meri Tanhai Main Khuwaboon Ke Siwa Kuch Bhi Nahi..
Meray kamray Ko Sajanay Ki Tamana Hai Tumhain..
Meray Kamray Main Kitaboon Ke Siwa Kuch Bhi Nahi..!!

Jo Haqeeqat Hai Us Haqeeqat Se..
Durr Maat Jao .. Laut Bhi Aaao..
Hogain Phir Kisi Khayal Main Ghum..
Tum Meri Adaatien Na Apnao..!!

Chaand Ki Pighli Hui Chandni Main..
Ao Kuch Rang E Sukhan Gholain Ge..
Tum Nahi Bolti Ho? Maat Bolo..
Hum Bhi Ab Tum Se Nahi Bolain Ge…!!

Meri Aqal O Hosh Ki Sab Halatain…
Tum Ne Sanchay Main Junooon Ke Dhaal Dein..
Karleya Tha Mainay Ehaad-E-Tark-E-IsHQ..
Tum Ne Phir Bahain Galay Main Dal Dein…!!

Mausam Mausam Ankhon Ko Aik Sapna Yaad Raha..
saddiyaan Jis Mein Simat Gayi Woh Lamha Yaad Raha ..
qou’s -e-qaza K Saathoon Rung Thay Us K Lehjay Mein ..
saari Mehfil Bhool Gayi Woh Chehra Yaad Raha !!

Tanhayioon Mein Baith Ker Kia Sochtay Ho Tum..
kuch To Hamain Batao Pareshaan Hum Bhi Hain !!!

Kabhi Fasloon Pe Kabhi Qayam Pe Zindagi..
Mainay Hans Ke Likh Di Tumharay Naam Pe Zindagi..!!

Yeh Shararat Bhara Lehja Tou Meri Addat Hai ..
Too Her Ik Baat Per Yu’n Num Na Kia Ker Ankhain ..!!

Har Shaks Nahi Hota Har Shaks Ke Qabil..
Har Shaks Ko Apnay Liay Socha Nahi Kartay..!!!

Yeh Mujhe Chain Kyun Nahi Parta…
Ek Hi Shaks Tha Jahan Main Kyaa!!

Jo Guzari Na Ja Saki Hum Se..
Hum Ne Woh Zindagi Guzari Hai…!!

Bara Maza Ho Ke Mehshaar Main Hum Karen Shikwa..
Woh Manatoon Se Kahen.. Chup Raho Khuda Ke Liay!!!

Ishq Walon Ke Naseebon Main Kahan Zouq E Junoon ..
Ishq Walay Hain Jo Har Cheez Luta Detay Hain…!!

Meri Zindagi Se Khelna Sab Ki Fitrat Si Ban Gai hai..
Kash Main Khilona Ban Kar Bikta… Tu Kisi Ek Ka Hota..!!

Jab Mujhe Bhi Nahi Koi Ehsaas..
Tum Ko Mera Azab Kya Maloom!!

Dastaan Khatam Honay Wali Hai..
Tum Meri Akhiri Mohabbat Ho..!!

Us Shaks Ne Ankhon Se Tableegh Hi Yun Ki..
Ke Main Bina Sochay Mohabbat Pe Emaan Ley Aya!!

Itna Asaan Nahi Hai.. Shehar E Wafa ka Pata Mohsin…
Khud Bataktay Phirtay Hain Yahan Raah Batanay WAlay..!!

Jo Moh Ko Arahi Thi Ab Lipti Hai Paon Se..
Barish Ke Baad Mitti Ki Fitrat Hi Badal Gai…!!

Roo Para Woh Shaks Aj Alwida Kehtay Mohsin..
Meri Shararaton Pey Jo Deta Tha Dhamkiyan Judai Ki..!!

Hamdardiyan..Khuloos..Dilasay..Tasaliyan…
Dil Tootnay Ke Baad Tamashay Bhout huway…!!

Badla Huwa Aj Meray Ansoonon Ka Rang..
Phir Dil Ke Zakham Ka Koi Tanka Udhaar Gaya..!!

Sokhay Patoon Ki Tarhan Bhikray Hain Hum Tu..
Kisi Ne Sameeta Bhi Tu Sirf Jalanay Ke Liay..!!

Bas Jatay Hain Dil Main Ijazat Leay Begair..
Woh Log Jinhain Hum Zindagi Bhar Paa Nahi Saktay..!!

Woh Ek Baat Bhout Talkh Kahi Thi Us Ne..
Baat Tu Yaad Nahi Yaad Hai Lehja Us Ka..!!

Yun Bhi Raaz Khul Hi Jaey Ga Ek Din Hamari Mohabbat Ka..
Mehfil Main Jo Hum Ko Chor Kar Sab Ko Salam Kartay Ho..!!

Kon Kandha Ho Mayasar Koi Saath Dey Mera..
Mujhe Tootay Huway Ek Khuwab Ki Tadfeen Karni Hai..!!

Itna Bhi Hum Se Naraz Maat Huwa Karo..
Badkismat Zaroor Hain Magar BeyWafa Nahi..!!

Dil Ki Khamooshi Se Sansoon Ke Tehar Janay Tak..
Yaad Ai Ga Mujhe Woh Shaks Mar Janay Tak..!!

Nahi Qabil Teray Laikin Munasib Jo Agar Samjoo..
Yaad Rakhna Duaon Main Yehi Hai Dua Ai Dost..!!

Bey Samaj Hi Rehtay Tu Theek Thaa..
Uljanain Barh Gai Hain Jab Se Samajdar Huway Hain…!!

Bhool Jana Tu Rasm E Duniya hai Wasi..
Tum Ne Bhala Kon Sa Kamal Kar Deya..!!

Sirf Woh Ek Shaks Kisi Tarhan Se Mil Jata..
Mujhe Manzoor Thay Phir Jitnay Bhi Khasaray hotay..!!

Meray Chehray Se Mera Dard Na Parh Pao Ge Wasi..
Meri Adat Hai Har Baat Pe Muskuranay Ki.!!

Baray Zor O Shoor Se Chal Raha Hai Karobar E Mohababt..
Kahin Chahateen Bikh Rahin Hain Kahin Log Badal Rahay Hain..!!!

Ek Rang Si Kaam Ho Khush Boosa Sa Ek Teer..
Marham Si Wardat Ho Aur Zakham Kahon Main..!!

Baat hai Rastay Pe Janay Ki ..
Aur Janay Ka Rasta Hi Nahi..!!

Thaka Deya Tumharay Firaq Ne Mujh Ko..
Kahen Main Khud Ko Gira Daloon Agar Ijazat ho Tu..!!

Lehaz E Ishq Na Hota Tu Tujh Se Ranjisheen Hoti ..
Shikayat Sirf Itni Hai Ke Tu Samja Nahi Mujh Ko…!!

Ek Shaks Kar Raha Hai Abhi Tak Wafa Ka Zikar..
Kash Us Zaban Daraz Ka Moh Noch Ley Koi..!!

Baat Koi Umeed Ki Mujh Se Kahi Nahi Gai..
Soo MeraY Khuwab Bhi Gaey.. Soo Meri Neend Bhi Gai..!!

Ai Jaan E Ehaad O Paimaan! Hum Ghar Basain Ge, Haan…
Tu Apnay Ghar Main Hoga , Hum Apnay Ghar main Hongay..!!!

Kahan Talash Karo Ge , Tum Mujh Jaisa Shaks..
Jo Tumharay Sitam Bhi Sahay Aur Tum Se Mohabbat Bhi Karay…!!

Koi Pochta Hai Mujh Se Meri Zindagi Ki Qeemat ..
Mujhe Yaad Ajata Hai Tera Halka Sa Muskurana..!!

Ajeeb Halat Hotay Hain Iss Mohabbat Main Dil Ke..
Udaas Jab Bhi Yaar Ho Qasoor Apna Lagta Hai..!!

Baat Mukaqadar Pe Aa Ruki Warna..
Koi Kasar Tu Na Chori Thi Tujhe Chahnay Main..!!

Woh Saath Tha Hamaray .. Ya..
Hum Pass Thay Un Ke.. Woh Zindagi Ke Kuch Din..
Yaa.. ZIndagi Thi Kuch Din..!!

Yunhi Umeed Dilaatay Hain Zamanay Walay..
Kab Laut Kar Atay Hain Chor Ke Janay Walay..!!!

HUm Ne Dekha Tha Faqat Shokh NAzar Ki Khatir..
Yeh Na Socha Tha Ke Tum Dil Main Utar Jao Ge…!!

Yadoon Ka Bandhan Torna Asan Nahi Hai..
Kuch Logon Dilon Main Bas Jatay hain Lahoo Ki Tarhan..!!

Meri Yadoon Se Bach Niklay Tu Wada Hai Mera Tujh Se..
Main Khud Duniya Se Keh Dunga… Kammi Meri Wafa Main Thi..!!

Tumhari Yaad Khazana Bhi Hai Aur Asasa Bhi Hai..
Jo Tum Ko Bholon Tu Phir Se Faqeer ho Jaon..!!

Jafa Jo Ishq Main Hoti Hai.. Woh Jafa Hi Nahi..
Sitam Na Ho tu Mohabbat Main Kuch Maza Hi Nahi …!!!

Ai Sanum Teray Hijar Main Na Safar Ke Rahay Na Watan Ke..
Giray Tukray Dil Ke Kahen Kahen Na Kafan Ke Rahay Na Dafan Ke Rahay..!!

Ishq Hara Hai Tu Dil Thaam Ke Kyun Bethay Ho?..
Tum Tu Har Baat Pe Kehtay Thay Koi Baat Nahi..!!

Teri Gaflaton Ko Khabar Kahan, Meray Hal E Dil Pe Nazar Kahan..
Tu Jafa Ki Hadh Main Na Asaka, Main Wafa Ki Hadh Se Guzar Gaya..!!

Churhi! Suna Hai Azal Se Zaban Daraz Hai..
Keh Dejeay Kalai Ko Laray Na Iss Ke Saath!!

Kisi Din Betha Ke Pochain Ge Teri Ankhon Se..
Kis Ne Sekhaya Hai Inhain Dil Main Utar Jana..!!

Mujhe Bhi Aenay Jaisa Kamal Hasil Hai ..
Main Tootaa Hun Tu Phir Beyshumar Hota Hun..!!

Ek Yeh Khuwahish Ke Koi Zakham Na Dekhay Dil Ka ..
Ek Yeh Hasrat Ke Koi Dekhnay Wala Hota..!!

Hasnay Pe Bhi Ajatay Hain Bey Sakta Ansoo ..
Kuch Log Mujhe Aisi Dua Dey Gaey Hain..!!

Aur Zamanat Wafa Ki Kya Hogi ..
Tum Meri Sans Girwi Rakh Lo..!!

Hamari Beykhudi Ka Haal Woh Pochay Agar ..
Tu Kehna Hosh Bus Itna Hai Ke Tum Ko Yaad Kartay Hain..!!

Duniya Ne Mujh Ko Yunhi Gazal Gar Samaj Leya ..
Main Tu Kisi Ke Husaan Ko Kam Kar Ke Likhta Hon..!!

Ek Main Hi Nahi Jurm E Mohabbat Ka Khatawar ..
Halka Sa Tabassum Bhi Tu Shamil Tha Udar Se..!!

Tum Se Na Kat Sakay Ga Andheroon Ka Yeh Safar ..
Ab Shaam Ho Rahi Hai Mera Haath Thaam Lo..!!

Woh Bhi Shahyad Ro Paray Weeran Kagaz Dekh Kar ..
Mainay Ussay Akhiri Khat Main Likha Kuch Bhi Nahi..!!

Ek Na Ek Roz Tu Main Dhond Hii Longa Tujh Ko ..
Thokarin Zehar Tu Nahi Ke Kha Bhi Na Sakun..!!

Bhout Dair Kardi Tum Ne Meri Dharkan Mehsoos Karnay Main ..
Woh Dil Neelam Hogaya Jis Ko Kabhi Hasrat Tumhari Thi..!!

Ishq Hai Apnay Asoolon Pe Azal Se Qayam ..
Imtehan Jiska Bhi Leta hai Riayat Nahi Karta..!!

Rishwat Bhi Nahi Leta Kambaqt Jaan Chornay ..
Yeh Ishq Mujhe Bhout Imandar Lagta Hai ..!!

Kitni Jaldi Dur Chalay Jatay hain Woh Log ..
Jinhain Hum Zindagi Samaj Kar Kabhi Khona Nahi Chahtay..!!

Baat Tu Aam Si Hai Par Itni Aaam Bhi Nahi ..
Sab Khushiyan Mil Jati Hain Par Mera Hissa Kho Jata Hai..!!

Itna Bhi Hum Se Naraz Maat Huwa Karo ..
Badkismat Zaroor Hain Hum Magar Beywafa Nahi..!!

Jo Az Tarak E Taluq Tu Kuch Bhi Na Tha Phir Bhi ..
Bichar Gaya Hun Main Tujh Se Teri Khushi Ke Liay..!!
موت تو نام سے بدنام ہوئی ورنہ . . .
تکلیف تو زندگی بھی دیا کرتی ہے . . ! !

وہ سوئی اتفاق آ ملے تھے ہم سے . .
ہم نادان سمجھے ہماری دعا ’ آن میں اثر حای… ! !

عشق انسان کو قلندر بو الی کرتا ہے . . .
عشق ! پاگل نہیں پاگل کو والی کرتا ہے . . ! ! !

سبھی کا دییخو نہیں ہوتا ہے ناسییبان روشن سیتاراون جیسا . . .
سیانا وہ ہے جو پاتھ جھڑ میں بھی ساجالے گلشن بہاروں جیسا . . . ! !

آؤ کبھی یوں بھی میرے پاس . .
كے آنے میں لمحہ اور جانے میں زندگی گزر جائے . . ! !

گو دہوکی دِل کو بہت باکاحایا ہم نے . . .
جس جگہ زخم ہو وہاں چوت سدا لگتی ہے . . ! !

تجھے بھولنے کو اک پل چائیے ،
وہ پل جسے موت کہتے ہیں لوج… ! !

نا نیند ہے آنكھوں میں ،
نا ہی کوئی حسرت ، کتنا سادہ سا رہ گیا ہوں میں تیرے باگھایر… ! ! !

کریں گی ترک تعلق یہ تم سے وعدہ رہا ،
بدن سے سانس کا رشتہ تو ٹوٹ جانے دو… ! ! !

ملا تو اور بھی تقسیم کر گیا مجھ کو ،
سامییتنا تھیں جسے میری کرچیاں ” محسن ” ! ! !

اِس قحط دوستی میں کوئی مجھ سے کیا ملے . .
خود اپنے آپ کو بھی میسر نہیں ہوں میں . . ! ! !

قبریں ہی جانتی ہیں كے اِس شہر جبر میں لوگ ،
مر کر ہوئے دفن ہیں یا زندہ جارای ہیں لوج… ! ! !

یہ محبت بھی ایک نیکی ہے . .
آؤ دریا میں ڈال دیتے ہیں ! ! !

اگر وہ زندگی میں فقط اک باڑ میرا ہو جاتا ،
تو میں زمانے کی کتابوں سے لفظ بیوفائی ہی مٹا دیتا… ! ! !

مجھے حکم ہوا کچھ اور مانگ اس كے سوا ،
میں دست دعا سے اٹھ گیا كے مجھے جستجو بس اسی کی تھی . ! ! !

جسم کی پوجا کو محبت کہتا ہے آج کا فلسفہ ،
یہی دور حاضر کی محبت ہے ، تو میں جاہل ہی ساحی… ! ! !

اسکی محبت کا سلسلہ بھی کیا عجیب سلسلہ تھا ،
اپنا بھی نہیں بنایا ، اور کسی کا ہونے بھی نہیں دیا… . . ! !

تیری محبت سے لے کر تیرے الوداع کہنے تک ،
میں نے صرف تجھے چاہا ، تجھ سے کچھ نہیں چااحا… ! ! !

سانسوں كے سلسلے کو نا دو زندگی کا نام ،
جینے كے با-واجود بھی مر جاتے ہیں کچھ لوگ . . . ! !

بھول جانا اور بھلا دینا فقط اک وہم ہے ،
دلوں سے کب نکلتے ہیں وہ لوگ محبت جنسے ہو جائے . ! ! !

تجھ سے ملا نہیں ہوں مگر چاہتا ہوں میں ،
تو ہمسفر ہو اور کہیں کا سفر نا ہو . ! ! !

یہی اک تماشہ ہوتا ہے راہ الفت میں ،
دِل اپنا ہوتا ہے پر راج کسی اور کا ہوتا ہے . ! ! !

رکھے ہیں دِل میں ہم نے بارے احترام سے ،
جو غم دیئے ہے تم نے محبت كے نام سے . ! ! !

جہاں جہاں کوئی ٹھوکر ہے میری قسمت میں ،
وہیں وہیں لیے پھرتی ہے زندگی مجھ کو . . ! !

پِھر یوں ہوا كے جسم ہی پتھر کا ہو گیا . . . . .
روکا جب اک شخص کی آواز نے مجھے ! !

شامل ہوں کھیل میں تیری تفریح كے لیے . .
بازی تو بڑی دیر سے ہارا ہُوا ہوں میں ! ! !

عشق میں وفا ہیں وضو کی مانند . .
بے وضو نمازیں نہیں ہوتی . . ! !

شدت عشق نے یہ حال کیا ہے میرا . . .
نبز چلتی ہے تو دحوکتی ہے کلائی میری . . ! ! !

علم و حکمت کا جنہیں شوق ہو آئِین نا ادھر . .
کوچا عشق میں کچھ بھی نہیں حیرت كے سوا ! !

روح تک نیلام ہو جاتی ہے بازار عشق میں . .
اتنا آسَن نہیں ہوتا کسی کو اپنا بنا لینا ! ! !

آئی عشق ! بس کر مجھ پر اور بوجھ نا دال . .
پہلے ہی میرا دِل ، دِل کا مریض ہے ! !

کمال کا پیر ہے عشق بھی . . .
چور دیتا ہے مرید کر كے ! !

ارے صاحب ! ! تنہائی کا اک الگ ہی مزہ ہے . .
اِس میں ڈر نہیں ہوتا کسی كے چور جانے کا ! !

کتنی عجیب ہے میرے اندر کی تنہائی . .
ہزاروں اپنے ہیں مگر یاد تم ہی آتے ہو . . ! !

میں نے تو وہ کھویا جو میرا تھا ہی نہیں . .
مگر اس نے وہ کھویا جو صرف اسی کا تھا . . ! !

تمہیں تو آرزو تھی حال میرا بَعْد سے بادتار ہوں . .
وہ دن آیا تو کیوں کہہ دیا ” دیکھا نہیں جاتا ” . . ! ! !

ہو جو ممکن تو اپنا بنا لو تم . .
میری تنہائی گواہ گا میرا اپنا کوئی نہیں . . ! ! !

سوچ سمجھ کر آنکھیں ملانا تم . . .
یہ پیار بہت پیار سے ہوجاتا ہے . . ! ! !

یقین اس کو نہیں عطا وضاحت میں نہیں کرتا . . .
گزر جائے گی سڑی عمر شاید یمتیحانو میں . . ! !

اک میں ہی نہیں جرم محبت کا خطا وار . .
ہلکا سا تبسم تو شامل تھا ادھر سے . . ! !

میں فنا ہو گیا وہ بدلہ پِھر بھی نہیں فراز . .
میری چاہت سے بھی سچی تھی نفرت اس کی . . ! !

نہیں قابل تیرے لیکن مناسب اگر سامجو . .
یاد رکھنا دعاؤں میں یہی ہے دعا آئی دوست ! ! !

ترس جاؤ گی ہمارے لبوں سے سننے کو اک اک لفظ . .
پیار کی بات تو کیا غم شکایت بھی نہیں کریں گی . . ! ! !

اِس قدر زور سے تاماچای پڑے ہیں . . .
دیکھ تو سرخی میرے رخسار کی . . ! ! !

عشق سمجھے تھے جس کو شاحیاد . . تھا بس اک نارسای کا رشتہ . .
میرے اور اس كے درمیان نکلا . . عمر بھر کی جدائی کا . . ! !

ہے یہ بازار جھوٹ کا بازار . . پِھر یونہی جنس کیوں نا ملیں ہم . .
کرکے اک دوسرے سے عہد وفا . . . آؤ کچھ دیر جھوٹ بولیں ہم . . ! ! !

کون سود زییان کی دُنیا میں . . دَرْد غربت کا ساتھ دیتا ہے . .
جب مقابل ہوں عشق اور دولت . . حسن دولت کا ساتھ دیتا ہے . . ! !

پاس رہ کر جدائی کی تجھ سے . . دور ہو کر تجھے تلاش کیا . .
میں نے تیرا نشان جہوم کرکے . . . اپنے اندر تجھے تلاش کیا . . ! !

تم جب آؤگی تو کھویا ہُوا پاؤگی مجھے . .
میری تنہائی میں خوابوں كے سوا کچھ بھی نہیں . .
میرے کمرے کو سجانے کی تمنا ہے تمہیں . .
میرے کمرے میں کتابوں كے سوا کچھ بھی نہیں . . ! !

جو حقیقت ہے اس حقیقت سے . .
دور مات جاؤ . . لوٹ بھی آاو . .
ہوگیں پِھر کسی خیال میں غم . .
تم میری ادااتیین نا اپنوں . . ! !

چاند کی پگھلی ہوئی چاندنی میں . .
آؤ کچھ رنگ سخن گھولاین گی . .
تم نہیں بولتی ہو ؟ مات بولو . .
ہم بھی اب تم سے نہیں بولیں گی . . . ! !

میری عقل و ہوش کی سب حالتیں . . .
تم نے سانچے میں جونوون كے ڈھال دیں . .
کرلییا تھا میں نے احاد ترک عشق . .
تم نے پِھر بانہیں گلے میں دال دیں . . . ! !

موسم موسم آنکھوں کو ایک سپنا یاد رہا . .
سادیان جس میں سمٹ گئی وہ لمحہ یاد رہا . .
قوو ’ س قضا کے سااتحون رنگ تھے اس کے لہجے میں . .
ساری محفل بھول گئی وہ چہرہ یاد رہا ! !

تنحاییون میں بیٹھ کر کیا سوچتے ہو تم . .
کچھ تو ہمیں بتاؤ پریشان ہم بھی ہیں ! ! !

کبھی فاصلوں پہ کبھی قیام پہ زندگی . .
میں نے ہنس كے لکھ ڈی تمہارے نام پہ زندگی . . ! !

یہ شرارت بھرا لہجہ تو میری عادت ہے . .
تُو ہر اک بات پر یو ’ ں نم نا کیا کر آنکھیں . . ! !

ہر شخص نہیں ہوتا ہر شخص كے قابل . .
ہر شخص کو اپنے لیے سوچا نہیں کرتے . . ! ! !

یہ مجھے چین کیوں نہیں پڑتا . . .
اک ہی شخص تھا جہاں میں کیا ! !

جو گزاری نا جا سکی ہم سے . .
ہم نے وہ زندگی گزاری ہے . . . ! !

بڑا مزہ ہو كے Mیحشاار میں ہم کریں شکوہ . .
وہ ماناتون سے کہیں . . چُپ رہو خدا كے لیے ! ! !

عشق والوں كے نصیبوں میں کاہان ذوق جنون . .
عشق والے ہیں جو ہر چیز لٹا دیتے ہیں . . . ! !

میری زندگی سے کھیلنا سب کی فطرت سی بن گئی ہے . .
کاش میں کھلونا بن کر بکتا . . . تو کسی اک کا ہوتا . . ! !

جب مجھے بھی نہیں کوئی احساس . .
تم کو میرا عذاب کیا معلوم ! !

داستان ختم ہونے والی ہے . .
تم میری اَخِیری محبت ہو . . ! !

اس شخص نے آنکھوں سے تبلیغ ہی یوں کی . .
كے میں بنا سوچے محبت پہ ایمان لے آیا ! !

اتنا آسان نہیں ہے . . شہر وفا کا پتہ محسن . . .
خود باتاکتے پھرتے ہیں یہاں راہ بتانے والے . . ! !

جو مہ کو آراہی تھی اب لپٹی ہے پاؤں سے . .
بارش كے بَعْد مٹی کی فطرت ہی بَدَل گئی . . . ! !

رُو پڑا وہ شخص آج الوداع کہتے محسن . .
میری شرارتوں پہ جو دیتا تھا دھمکیاں جدائی کی . . ! !

Hامداردیان . . خلوص . . دلاسے . . تاسالیان . . .
دِل ٹوٹنے كے بَعْد تماشے بہت ہوئے . . . ! !

بدلہ ہُوا آج میرے انسونون کا رنگ . .
پِھر دِل كے زخم کا کوئی ٹانکا اُدھار گیا . . ! !

سوکھے پتّوں کی طرح بحیکرای ہیں ہم تو . .
کسی نے سامییتا بھی تو صرف جلانے كے لیے . . ! !

بس جاتے ہیں دِل میں اِجازَت لیے بغیر . .
وہ لوگ جنہیں ہم زندگی بھر پا نہیں سکتے . . ! !

وہ اک بات بہت تلخ کہی تھی اس نے . .
بات تو یاد نہیں یاد ہے لہجہ اس کا . . ! !

یوں بھی راز کھل ہی جائے گا اک دن ہماری محبت کا . .
محفل میں جو ہم کو چور کر سب کو سلام کرتے ہو . . ! !

کون کندھا ہو میسر کوئی ساتھ دے میرا . .
مجھے ٹوٹے ہوئے اک خواب کی تدفین کرنی ہے . . ! !

اتنا بھی ہم سے ناراض مات ہُوا کرو . .
بدقسمت ضرور ہیں مگر بے وفا نہیں . . ! !

دِل کی خاموشی سے سانسوں كے ٹہر جانے تک . .
یاد آئی گا مجھے وہ شخص مر جانے تک . . ! !

نہیں قابل تیرے لیکن مناسب جو اگر سامجو . .
یاد رکھنا دعاؤں میں یہی ہے دعا آئی دوست . . ! !

بے سمجھ ہی رہتے تو ٹھیک تھا . .
ولجاناین بڑھ گئی ہیں جب سے سمجھدار ہوئے ہیں . . . ! !

بھول جانا تو رسم دُنیا ہے وصی . .
تم نے بھلا کون سا کمال کر دیا . . ! !

صرف وہ اک شخص کسی طرح سے مل جاتا . .
مجھے منظور تھے پِھر جتنے بھی خسارے ہوتے . . ! !

میرے چہرے سے میرا دَرْد نا پڑھ پاؤ گی وصی . .
میری عادت ہے ہر بات پہ مسکرانے کی . ! !

بارے زور و شور سے چل رہا ہے کاروبار محابابت . .
کہیں چاہتیں بیخ رہیں ہیں کہیں لوگ بَدَل رہے ہیں . . ! ! !

اک رنگ سی کام ہو خوش بوسا سا اک تیر . .
مرہم سی واردات ہو اور زخم کہوں میں . . ! !

بات ہے رستے پہ جانے کی . .
اور جانے کا رستہ ہی نہیں . . ! !

تھکا دیا تمہارے فراق نے مجھ کو . .
کہیں میں خود کو گرا ڈالوں اگر اِجازَت ہو تو . . ! !

لحاظ عشق نا ہوتا تو تجھ سے رانجیشین ہوتی . .
شکایت صرف اتنی ہے كے تو سمجھا نہیں مجھ کو . . . ! !

اک شخص کر رہا ہے ابھی تک وفا کا ذکر . .
کاش اس زبان دراز کا مہ نوچ لے کوئی . . ! !

بات کوئی امید کی مجھ سے کہی نہیں گئی . .
سو میرے خواب بھی گئے . . سو میری نیند بھی گئی . . ! !

آئی جان احاد و پیماں ! ہم گھر باساین گی ، ہاں . . .
تو اپنے گھر میں ھوگا ، ہم اپنے گھر میں ھونگے . . ! ! !

کاہان تلاش کرو گی ، تم مجھ جیسا شخص . .
جو تمہارے ستم بھی سہے اور تم سے محبت بھی کرے . . . ! !

کوئی پُوچھتا ہے مجھ سے میری زندگی کی قیمت . .
مجھے یاد آجاتا ہے تیرا ہلکا سا مسکرانا . . ! !

عجیب حالت ہوتے ہیں اِس محبت میں دِل كے . .
اداس جب بھی یار ہو قصور اپنا لگتا ہے . . ! !

بات موکاقادار پہ آ رکی ورنہ . .
کوئی کسر تو نا چوری تھی تجھے چاہنے میں . . ! !

وہ ساتھ تھا ہمارے . . یا . .
ہم پاس تھے ان كے . . وہ زندگی كے کچھ دن . .
یا . . زندگی تھی کچھ دن . . ! !

یونہی امید دلااتے ہیں زمانے والے . .
کب لوٹ کر آتے ہیں چور كے جانے والے . . ! ! !

ہم نے دیکھا تھا فقط شوخ نظر کی خاطر . .
یہ نا سوچا تھا كے تم دِل میں اُتَر جاؤ گی . . . ! !

یادوں کا بندھن توڑنا آسَن نہیں ہے . .
کچھ لوگوں دلوں میں بس جاتے ہیں لہو کی طرح . . ! !

میری یادوں سے بچ نکلے تو وعدہ ہے میرا تجھ سے . .
میں خود دُنیا سے کہہ دونگا . . . کمی میری وفا میں تھی . . ! !

تمہاری یاد خزانہ بھی ہے اور اَثاثَہ بھی ہے . .
جو تم کو بحولون تو پِھر سے فقیر ہو جاؤں . . ! !

جفا جو عشق میں ہوتی ہے . . وہ جفا ہی نہیں . .
ستم نا ہو تو محبت میں کچھ مزہ ہی نہیں . . . ! ! !

آئی صنم تیرے ہجر میں نا سفر كے رہے نا وطن كے . .
گرے ٹکڑے دِل كے کہیں کہیں نا کفن كے رہے نا دفن كے رہے . . ! !

عشق ہارا ہے تو دِل تھام كے کیوں بیٹھے ہو ؟ . .
تم تو ہر بات پہ کہتے تھے کوئی بات نہیں . . ! !

تیری غفلتوں کو خبر کاہان ، میرے حَل دِل پہ نظر کاہان . .
تو جفا کی حد میں نا آسکا ، میں وفا کی حد سے گزر گیا . . ! !

چورحی ! سنا ہے ازل سے زبان دراز ہے . .
کہہ دیجیای کلائی کو لڑے نا اِس كے ساتھ ! !

کسی دن بیٹھا كے پوچھیں گی تیری آنکھوں سے . .
کس نے سکھایا ہے انہیں دِل میں اُتَر جانا . . ! !

مجھے بھی اینے جیسا کمال حاصل ہے . .
میں توتا ہوں تو پِھر بییشومار ہوتا ہوں . . ! !

اک یہ خواہش كے کوئی زخم نا دیکھے دِل کا . .
اک یہ حسرت كے کوئی دیکھنے والا ہوتا . . ! !

ہسنے پہ بھی اجاتے ہیں بے سکتا آنسو . .
کچھ لوگ مجھے ایسی دعا دے گئے ہیں . . ! !

اور ضمانت وفا کی کیا ھوگی . .
تم میری سانس گروی رکھ لو . . ! !

ہماری بے خودی کا حال وہ پوچھے اگر . .
تو کہنا ہوش بس اتنا ہے كے تم کو یاد کرتے ہیں . . ! !

دُنیا نے مجھ کو یونہی غزل گر سمجھ لیا . .
میں تو کسی كے حوسان کو کم کر كے لکھتا ہوں . . ! !

اک میں ہی نہیں جرم محبت کا خطا وار . .
ہلکا سا تبسم بھی تو شامل تھا ادھر سے . . ! !

تم سے نا کٹ سکے گا اندھیروں کا یہ سفر . .
اب شام ہو رہی ہے میرا ہاتھ تھام لو . . ! !

وہ بھی شاحیاد رَو پرے ویران کاغذ دیکھ کر . .
میں نے اُسے اَخِیری خط میں لکھا کچھ بھی نہیں . . ! !

اک نا اک روز تو میں ڈھونڈ ہی لونگا تجھ کو . .
تھوکارین زہر تو نہیں كے کھا بھی نا سکوں . . ! !

بہت دیر کردی تم نے میری دھڑکن محسوس کرنے میں . .
وہ دِل نیلم ہو گیا جس کو کبھی حسرت تمہاری تھی . . ! !

عشق ہے اپنے اسولون پہ ازل سے قیام . .
امتحان جسکا بھی لیتا ہے رعایت نہیں کرتا . . ! !

رشوت بھی نہیں لیتا کمبخت جان چھوڑنے . .
یہ عشق مجھے بہت ایماندار لگتا ہے . . ! !

کتنی جلدی در چلے جاتے ہیں وہ لوگ . .
جنہیں ہم زندگی سمجھ کر کبھی کھونا نہیں چاہتے . . ! !

بات تو عام سی ہے پر اتنی آم بھی نہیں . .
سب خوشیاں مل جاتی ہیں پر میرا حصہ کھو جاتا ہے . . ! !

اتنا بھی ہم سے ناراض مات ہُوا کرو . .
بدقسمت ضرور ہیں ہم مگر بے وفا نہیں . . ! !

جو اَز ترک تعلق تو کچھ بھی نا تھا پِھر بھی . .
بچھڑ گیا ہوں میں تجھ سے تیری خوشی كے لیے . . ! !

اپنا تبصرہ بھیجیں